طالبان نے بزور طاقت اقتدار حاصل کیا تو افغانستان تنہا رہ جائے گا: امریکی وزیر خارجہ

طالبان نے بزور طاقت اقتدار حاصل کیا تو افغانستان تنہا رہ جائے گا: امریکی وزیر خارجہ

امریکی وزیر خارجہ انٹنی بلنکن کا کہنا ہے کہ اگر طالبان بزور طاقت افغانستان میں اقتدار پر قابض ہوئے اور عوام کے حقوق کا احترام نہ کیا تو افغانستان تنہا رہ جائے گا۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق بدھ کو بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے امریکی وزیر خارجہ نے مزید کہا کہ ’ایسا افغانستان جو اپنے عوام کے حقوق کا احترام نہیں کرے گا جو اپنے عوام کے خلاف مظالم کے گا ایک تنہا ملک ہو گا۔‘

ان کا کہنا تھا کہ حالیہ ہفتوں میں طالبان کی کارروائیوں کے دوران ’مظالم‘ کی اطلاعات تشویش ناک ہیں۔ ان کے مطابق ایسی اطلاعات طالبان کی ملک کے حوالے سے نیت کا کوئی اچھا تاثر پیش نہیں کرتیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’امریکہ بہت حد تک افغانستان میں افغان حکومت کی مدد میں مصروف عمل رہے گا اور ہم مختلف شعبوں میں مدد فراہم کر رہے ہیں جن میں سکیورٹی فورسز کی مدد بھی شامل ہے۔اس کے علاوہ ہم افغانستان میں بامعنی مذاکرات اور تنازعے کے پر امن حل کے لیے فریقین کے ساتھ سفارتی کوششون میں بھی شامل رہیں گے۔

امریکی وزیر خارجہ کے مطابق ’طالبان کا کہنا ہے کہ وہ بین الااقوامی طور پر قبولیت چاہتے ہیں اور افغانستان کے لیے عالمی حمایت کے خواہاں ہیں۔ شاید وہ چاہتے ہیں کہ ان کے رہنماؤں کو دنیا بھر میں پابندیاں اٹھانے کے بعد آزادی سے سفر کرنے کی اجازت دے دی جائے۔ لیکن ملک پر بزور طاقت قبضہ کرنا اور عوام کے حقوق کے خلاف ورزی کرنا وہ راستہ نہیں جس سے یہ مقاصد حاصل کیے جا سکیں۔‘

انٹنی بلنکن کا کہنا تھا کہ ’صرف ایک راستہ ہے جو کہ میز پر تنازعات کو پر امن انداز میں حل کرنا ہے۔ ایسا افغانستان جس کی حکومت میں سب شامل ہوں اور اس میں تمام لوگوں کی نمائندگی شامل ہو۔‘

یاد رہے امریکی وزیر خارجہ انٹنی بلنکن ان دنوں بھارت کا دورہ کر رہے ہیں جہاں ان کی بھارت کے اعلی حکام کے ساتھ ملاقاتوں کا سلسلہ جاری ہے۔

انڈیپینڈینٹ اردو

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: