پاکستان کی معاشی بڑھوتری کی شرح 4 فیصد تک رہنے کا امکان، فوربز

پاکستان کی معاشی بڑھوتری کی شرح 4 فیصد تک رہنے کا امکان، فوربز

bar chart and rippled Pakistani flag illustration

اسلام آباد: امریکا کے معروف بزنس میگزین فوربز نے کورونا وبا سے نمٹنے اور پاکستانی معیشت کے استحکام اور بڑھوتری کیلئے حکومت کے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ دانش مندانہ پالیسیوں کے ذریعہ پاکستان اپنی معیشت کی بحالی میں کامیاب رہا ہے اور معاشی بڑھوتری کی شرح 4 فیصد تک رہنے کا امکان ہے۔

میگزین نے اپنی حالیہ رپورٹ میں کہا ہے کہ ایسے وقت میں جب امریکہ اور بھارت جیسے ممالک کو بھی کورونا وائرس سے نمٹنے میں دشواری کا سامنا ہے۔ اس صورت حال میں پاکستان اپنی معیشت کی بحالی میں کامیاب رہا ہے جو توقع ہے کہ 2021ء میں ابتدائی تخمینوں سے تجاوز کر کے تقریباََ 4 فیصد کی شرح سے ترقی کرے گی۔

رپورٹ کے مطابق سٹیٹ بینک آف پاکستان نے ابتدائی طور پر جی ڈی پی میں 3 فیصد جبکہ آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک نے بالترتیب 1.5 فیصد اور 1.3 فیصد اضافے کی پیش گوئی کی تھی۔ تاہم یہ 4 فیصد رہنے کی توقع ہے اور ملک کی فی کس آمدنی بھی 14.6 فیصد اضافے سے 2020ء کی 1405 ڈالر سے بڑھ کر 2021ء کے اختتام تک 1610 ڈالر ہو جائے گی۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ خدمات کا شعبہ، جس کے بارے میں پیش گوئی کی گئی کہ وہ 2020-21ء میں 4.43 فیصد کی شرح سے ترقی کرے گی، اس کا مجموعی ترقی میں اہم حصہ رہا ہے، یہ یقینی طور پر پاکستان جیسے ملک کے لئے انتہائی قابل ذکر ہے جو اپنے سروسز سیکٹر کو وسعت دینے میں کامیاب ہو رہا ہے۔ زرعی شعبے کی شرح نمو کا اندازہ 2.77 فیصد جبکہ صنعتی شعبے کا 3.57 فیصد لگایا گیا ہے۔

فوربز نے لکھا ہے کہ بھارت میں کورونا کی صورت حال کافی خراب رہی ہے جہاں ساڑھے تین لاکھ کے لگ بھگ اموات ہو چکی ہیں، تاہم پاکستان میں سوشل میڈیا کی وجہ سے شعور میں اضافہ ہوا، شہریوں نے وائرس سے بچاؤ کے لیے ماسک پہننا شروع کئے۔ پچھلے سال عید کے موقع پر کیسز میں اضافے کا رجحان دیکھنے میں آیا، لیکن رواں سال حکومت نے جزوی لاک ڈاون لگانے، غیر ضروری کاروباروں کو بند کرنے اور سیاحت پر پابندی عائد کرنے جیسے اقدامات کیے، جس سے کورونا کیسز میں اضافہ نہیں ہو سکا۔

Profit.com

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: